When it is the season of elections arriving, you would find lines of candidates outside your houses making high-end promises to you and asking for your trust and vote. The false claims and high averments make you fall in their trap for the next five years. You should be asking yourself, that if a candidate is spending millions on his election campaign, he would definitely compensate for the loss by making more money through his seat. Instead of serving the countrymen and Pakistan, if a person is focused on corruption, is he worth electing? Here, it is foremost necessary to make the right decision in choosing your representative and decision-maker for the future. There are several factors to keep in mind before you stamp that powerful paper. A candidate with the following traits in the light of Quran and Sunnah is more deserving to get your vote: 1. Pious and God-fearing 2. An honest and trustworthy image in society 3. Someone who wouldn’t use his seat for making money 4. A knowledgeable person in required fields 5. Mentally and physically suitable for the position 6. Has a strong personality 7. Has a clean past Don’t let corrupt and ineligible people rule over you! الیکشن کا دور آتے ہی آپ کے دروازے کے باہر امیدواروں کی ایک لمبی قطار آموجود ہوتی ہے جو بلند بانگ دعوے اور وعدے کرنے میں دن رات ایک کردیتے ہیں. ان وعدوں سے متاثر ہوتی ہماری بھولی عوام، اپنے مسائل کے حل کا نجات دہندہ سمجھ کر کے ان چکنی چپڑی باتیں کرتے امیدواروں کی جھولی میں اپنا ووٹ ڈال آتی ہے اور پھر اگلے پانچ سال کے لیے یہی امیدوار طوطے کی طرح آنکھیں پھیر لیتے ہیں اور پلٹ کے ان گلیوں میں قدم رنجا ہونا بھی بھول جاتے ہیں جہاں ووٹ کی تگ و دو میں دن رات ایک کیے ہوتے ہیں. تو پھر سوچنے کی بات یہ ہے کے امیدواروں کی نقار خانے میں آخر کس کو چنا جائے اور کس پہ اعتماد کیا جائے؟ کیا اس پر کے جس نے لاکھوں روپے اپنی الیکشن کیمپین پہ لگا دیے؟ یقیناً اس کو یہ سیٹ حاصل کر کے لاکھوں سے بڑھ کر کمانے کی حرص ہے جو کہ کرپشن کے بغیر ممکن نہیں. کیا ایسا شخص آپ کے ووٹ کا مستحق ہے؟ ووٹ دینے سے پہلے ایک امیدوار میں کونسی صلاحیتوں کا ہونا ضروری ہے؟ قرآن و حدیث کی روشنی میں ہمیں درج ذیل خصوصیات ملتی ہیں: 1. متقی اور خدا سے ڈرنے والا ہو. صرف عوام نہیں، خدا کے آگے جواب دہی کا بھی احساس ہو. 2. امانت و دیانت دار ہو اور معاشرے میں عزت کی نگاہ سے جانا جاتا ہو. 3. اپنا عہدہ مال بنانے کے لیے استعمال کرنے کے عزائم نہ رکھتا ہو 4. اپنے شعبے میں مہارت رکھتا ہو 5. ذہنی و جسمانی صلاحیتوں کے اعتبار سے بہترین ہو 6. ایک متاثر کن شخصیت کا مالک ہو 7. بے داغ ماضی ہو زرا سوچ سمجھ کے فیصلہ کیجئے. اپنا مستقبل محفوظ ہاتھوں کے حوالے کیجئے. Agahi is working to provide a source of thoughtful content with precise and authentic knowledge, helpful reminders, and deep insights for every member of the society.

Add comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Subscribe For Email Updates